جاز کی طرف سے ڈیجیٹل کی دنیا میں سب سے بڑا قدم، 4 جی فون اب صرف 1800/- روپے میں

کل، جاز نے 4 جی فیچر فون کو صرف 1800 روپے میں لانچ کیا۔ فون کچھ “ضروری” ایپس، جیسے گوگل میپس، وٹس ایپ، فیک بک، یوٹیوب، گوگل اسسٹنٹ کو چلا سکتا ہے۔ جبکہ ٹیلی کام آپریٹرز ماضی میں کئی ڈیوائسز متعارف کرا چکے ہیں، یہ مخصوص فون ایک بڑی پیش رفت ہے اور میرے خیال میں اس میں یہ صلاحیت موجود ہے کہ وہ ڈیجیٹل پاکستان کے خواب کی طرف اہم کردار ادا کرنے والوں میں سے ایک بن جائے۔

بیک گراونڈ:

پاکستان نے 3 G اور 4G کے 2014 کے آغاز کے بعد انٹرنیٹ کے میجر اپ ٹیک کو دیکھا، اور ہم پچھلے سات سالوں کے دوران 2013 میں صرف 2 لاکھ انٹرنیٹ صارفین سے بڑھ کر 70 لاکھ کے قریب انٹرنیٹ صارفین تک پہنچ چکے ہیں۔

مذکورہ گراف واضح طور پر ظاہر کرتا ہے کہ انٹرنیٹ پر نئے صارفین مستحکم شرح سے آرہے ہیں، لیکن اگر آپ 3 جی، 4 جی نیٹ ورکس، آگاہی، سماجی ضروریات وغیرہ کی کوریج جیسے عناصر میں عنصر کرتے ہیں تو پھر یہ ظاہر ہے کہ ترقی کا رجحان منفی ہے اور ہوسکتا ہے کہ وقت کے ساتھ ہی سست پڑ جائے۔ اس بنیادی طور پر اس کا مطلب یہ ہے کہ 2018/19 میں نئے 3G، 4G سبسکرائبرز کی تعداد وہی رہی جو 2014/15 میں تھی، جب کم کوریج تھی، لوئر پیر پریشر اور زیادہ ٹیرف تھا۔ تو کیوں ترقی رجحان بھی بظاہر اندراج کے لیے تمام رکاوٹ کم وقت کے ساتھ ساتھ ہو کے طور پر فلاٹٹینانگ ہے؟ جواب استطاعت ہے۔ پاکستان میں 3G اور 4G ٹیرف پہلے ہی دنیا میں سب سے کم میں سے ایک ہے لہذا مخصوص مجرم، اس معاملے میں، اسمارٹ فون کی قیمتیں ہیں۔ 2020 میں بھی جب کریم، بائیکا، واٹس ایپ وغیرہ جیسی ایپس بنیادی ضروریات بن چکی ہیں، تب بھی پاکستان میں 90 لاکھ فون صارفین ایسے ہیں جو انٹرنیٹ سے مربوط نہیں ہیں۔ یہ دسیوں لاکھوں افراد بنیادی طور پر اسمارٹ فون کی قیمتوں میں رکاوٹ بنے ہوئے ہیں چونکہ اگر وہ مارکیٹ میں سستے ترین آپشن کے لئے بھی جاتے ہیں تب بھی اس کی قیمت پی کے آر 6 ہزار ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ہمارے خیال میں پی کے آر 1,800 کا یہ فون ڈیجیٹل پاکستان کو فعال کرنے میں فیصلہ کن کردار ادا کرے گا، کیونکہ اس کو کسی بھی شخص کی طرف سے برداشت کیا جا سکتا ہے جو فون چاہتا ہے۔

جی ڈی پی پر اثرات:

جبکہ عام طور پر قبول شدہ نمبروں کا کہنا ہے کہ انٹرنیٹ کے استعمال میں 10 فیصد اضافے سے جی ڈی پی پر 1.38 فیصد تک اثر پڑتا ہے، لیکن ہمیں یقین نہیں ہے کہ اس سے پاکستان میں انٹرنیٹ استعمال کرنے والے 70 ملین افراد کی بڑے پیمانے پر آبادی پر غور کیا جائے گا۔ ایک بات یقینی طور پر ہے اگرچہ، یہ جی ڈی پی پر ایک قابل اثر اثر ہے۔ اس حقیقت کے باوجود کہ اس بارے میں کوئی ٹھوس ڈیٹا موجود نہیں ہے کہ انٹرنیٹ کے کاروبار پاکستان کی معیشت پر کس طرح اثر انداز ہورہے ہیں، کریم، بائیکا، ای کامرس کے عروج، ڈیجیٹل والٹس کے حجم میں اضافہ، بے حد ہے۔ اور واضح رہے کہ 70 لاکھ انٹرنیٹ صارفین قومی معیشت میں اپنا حصہ ڈال رہے ہیں۔ انٹرنیٹ پر مزید 70 لاکھ صارفین کا مطلب یہ ہوگا کہ اب تک جو کچھ ہم نے حاصل کیا ہے وہ سب کچھ صرف دوگنا ہوگا۔ اور اگر اگلے دو سالوں میں ہمیں کسی نہ کسی طرح ادائیگی کا گیٹ وے مل جائے (جس کا امکان بہت زیادہ ہے) تو معاشی اثرات کثیر التعداد مرتب ہوں گے۔ اور ہم آپ کو بتا سکتے ہیں کہ یہ سب جاز کے ہندسے 4 جی سے ممکن ہے، اس فون کی جس کی قیمت صرف PKR 1،800 ہے۔ اور اگر آپ سوچ رہے ہیں کہ میں اپنی تمام تر توجہ ایک ہی فون پر کیوں ڈال رہا ہوں، اس کی وجہ یہ ہے کہ مجھے اس قیمت کی حد میں اس طرح کے فیچرز اور کوالٹی والا کوئی دوسرا فون نظر نہیں آتا۔ مزید برآں، ڈاکٹر ثانیہ نشتر کی کل کے آغاز میں موجودگی کا مطلب یہ ہوسکتا ہے کہ احسان یا کفلت پروگراموں میں ان میں سے 5.5 ملین آلات پاکستانیوں میں تقسیم ہوں اور اگر ایسا ہوتا ہے تو، جاز ڈیجٹ 4 جی پاکستان کی تاریخ میں شروع ہونے والی سب سے زیادہ متاثر کن مصنوعات میں سے ایک بن سکتا ہے۔

فون کے متعلق:

اور اگر آپ فون کے بارے میں مزید جاننا چاہتے ہیں تو یہ جھلکیاں ہیں:

یہ فون 4 جی کو سپورٹ کرتا ہے

یہ فون KAIOS آپریٹنگ سسٹم کے ساتھ آتا ہے

یہ فون 4 جی اور وائی فائی کو بھی سپورٹ کرتا ہے

اس فون میں مختلف بلٹ ان ایپس بھی موجود ہیں جن میں جن میں واٹس ایپ، فیس بک، گوگل میپس، گوگل اسسٹنٹ، پی ڈی ایف ریڈر، جی پی ایس موجود ہے-

اس فون میں فرنٹ اور بیک کیمرہ بھی دیا گیا ہے

جاز کا کہنا ہے کہ جاز آنے کچھ مہینوں میں کریم، جاز کیش، ویڈیو کالنگ BYKEA اور کچھ مزید ایپس لئے گا

قیمت: =1800/-

ماہانہ: PKR 300 فی مہینہ 12 ماہ کے لئے، جس کے خلاف آپ کو مندرجہ ذیل ملے گا:

1000 آن نیٹ مینٹس

1000 ایس ایم ایس

1000 ایم بی انٹرنیٹ جس میں واٹس ایپ اور فیس بک 3 ماہ کے لیے موجود ہے

Share This Story !

اپنا تبصرہ بھیجیں